Skip to content
 

حادثہ

کل رات میرے ساتھ عجب حادثہ ہوا
کھڑکی سے کوئی
میری طرف جھانکنے لگی
جیسے کہ انتظار میں
میرے تھی وہ کھڑی
صندوق جیسا سینہ
میرا لرز گیا
اور دل بھی پھڑپھڑانے لگا زور زور سے
جلوے کو دیکھنے جو ذرا
آڑ میں گیا
کمبخت نوجوان اُدھر
ایک آگیا
شائد اُسی کے واسطے
کھڑکی تھی بے قرار
دیکھا مجھے تو ٹِھٹکا
اور پوچھنے لگا
”چِچا ٹائم کیا ہوا“؟
سارا پسینہ خشک ہوا ایک آن میں
طوفان دھڑکنوں کا اچانک ہی رک گیا
کہہ کر چِچا جو اُس نے مخاطب کیا مجھے
ایسے لگا کہ وقت نہیں پوچھتا ہے وہ
بلکہ وہ کررہا ہے میری عمرکا سوال
میں بھی تھا بوکھلایا ہوا
ایسا بدحواس
میری زباں سے نکلا
”پورے پچاس سال“ !!

  • Share/Bookmark

ایک تبصرہ

تبصرہ کیجئے