Skip to content
محفوظ تحاریر برائے : May 2010
2 of 212

  • ڈاکٹر عابد معز - شگوفہ کے تڑی پار مدیر (اوور سیز ایڈیٹر)

    زمرہ : مزاحیہ خاکے

    [15 May 2010]

    اتفاق سے میں ڈاکٹر عابد معز صاحب کو اس وقت سے جانتا ہوں جب سے وہ مجھے جانتے ہیں۔ شگوفہ ہماری آشنائی کا ذریعہ بنا۔
    ہم دونوں ڈاکٹر مصطفٰے کمال صاحب کے حلقۂ ارادت میں شامل ہیں۔ ڈاکٹر صاحب کی حیثیت با کمال خلیفۂ اول کی ہے ہم تو خیر ایک سیدھے سادے سے مرید ہیں [...]

  • دکنی زبان کی شان

    زمرہ : مزاحیہ مضامین

    [15 May 2010]

    یہ مانا کہ آج نہ وہ حیدرآبادی تہذیب و ثقافت باقی رہی نہ وہ جامعہ عثمانیہ اور نہ وہ دائرةالمعارف جہاں سے علم و ادب کے ایسے دریا رواں ہوئے کہ رہتی دنیا تک تشنگانِ اردو سیراب ہوتے رہیں گے۔
    اِسکے باوجود دکن کی فضاؤں میں اردو اپنی بول چال کے ذریعے اپنے صدیوں پُرانے مخصوص [...]

  • جماعتوں کو درپیش مشکلات

    زمرہ : سماجی مضامین

    [14 May 2010]

    داخلی مشکلات :
    1)۔مقصد کا تعین
    جماعتوں کے اپنے مقصد کے حصول میں اگر سب سے بڑی رکاوٹ بن سکتی ہے تو اس کی اپنی ہئیت ِ ترکیبی Infrastructure میں چھپی ہوئی وہ کمزوری جس کا تعلق پہلے فکر سے ہے بعد میں عمل سے۔چونگہ ہر عمل کا چشمہ یا منبع اس کی فکر ہوتی ہے لہذا [...]

  • بابری مسجد - تعمیر تا شہادت

    زمرہ : سیاسی مضامین

    [13 May 2010]

    6/ ڈسمبر 1992ء ہندوستان کی تاریخ کا وہ اہم ترین دن بن چکاہے جو 15 / اگست 1947 ء کی طرح ایک point of reference ہے جس طرح قبل آزادی اور بعد آزادی جیسی اصطلاحات رائج تھیں بلا شبہ ہندوستان کی آئندہ قبل شہادت بابری مسجد اور بعد شہادت بابری مسجد کے حوالے سے لکھی [...]

  • توپ کی شان

    زمرہ : مزاحیہ مضامین

    [11 May 2010]

    ہمارے نزدیک ثوب یعنے عربوں کا پسندیدہ سفید جُبّہ ایک انتہائی مہذّب لباس ہے یہ ثوب جا کر توپ کیسے ہوگیا یہ جاننے کیلئے لفظوں کے بگاڑ کی تاریخ پڑھنی پڑے گی۔ لفظوں کو بگاڑنے کے اس فن میں صرف حیدرآبادی ہی ماہر نہیں ہیں جنہوں نے اچّھی خاصی تقریب کو تخریب کرڈالا بلکہ پاکستانی [...]

  • فائدہ سوٹ کا

    زمرہ : مزاحیہ مضامین

    [10 May 2010]

    بھائی یوسف امتیاز کو کینیڈا سے نہ جانے کیا سوجھی کہ سوٹ پر تنقید کرنے لگے ۔
    سوٹ پہننا تو ہندوستانیوں ، پاکستانیوں اور بنگلہ دیشیوں کے بنیادی حقوق میں سے ایک ہے ۔ جیسے ہمارے اور بنیادی حقوق ہیں مثلاً سڑکوں پر بلا خوف و خطر تھوک دینا ، پان کی پچکاریوں سے اچھی [...]

  • آؤ چمچہ گِری سیکھیں

    زمرہ : مزاحیہ مضامین

    [6 May 2010]

    اِس سے قبل کے تربیتی ورکشاپ میں ہم نے آپ کو فنِ لیڈری اور فنِ تقریر کے گُر سِکھائے تھے آیئے آج ہم رموزِ چمچہ گِری بتاتے ہیں۔
    ترقی یافتہ ملکوں میں اِسی کام کے کرنے والوں کو king maker یا lobbyist کہاجاتا ہے۔ لیکن ہمارے ہاں نہ جانے کیوں اِنہیں چمچہ کہتے ہیں حالانکہ کام [...]

  • آؤ لیڈری سیکھیں

    زمرہ : مزاحیہ مضامین

    [5 May 2010]

    اس سے پہلے کے سبق میں ہم نے فنِ تقریر کی تربیت کی تھی، آیئے آج ہم آپ کو لیڈر بننے کے گُر سکھاتے ہیں ۔ ان آزمودہ نسخوں پر اگر آپ نے صد فیصد عمل کیا تو آپ کو ہر پارٹی ٹکٹ آفر کر سکتی ہے۔ اور اگر آپ نے ان تربیتی اصولوں پر [...]

  • آؤ تقریر سیکھیں

    زمرہ : مزاحیہ مضامین

    [2 May 2010]

    کس نے کہا کہ تقریر کے لئے آیا کسی علمی یا فنی قابلیت کی ضرورت ہے ؟
    ہمارا خیال ہے کہ تقریر کے لئے لیڈری کے ذرا سے شوق کی ضرورت ہے جو کہ آپ میں موجود ہے جس کا ثبوت یہ ہے کہ آپ یہ مضمون آگے پڑھ رہے ہیں ورنہ عنوان دیکھتے ہی آپ [...]

  • ایک خوددار تارکِ وطن کی ڈائری

    زمرہ : مزاحیہ مضامین

    [1 May 2010]

    1 جنوری
    آج میں نے Resign کر دیا۔ مجھ سے جونیر ایک سعودی کو منیجر بنادیا گیا۔ یہ میری قابلیت کی توہین ہے۔ ساراکام ہم کریں اور کریڈٹ وہ لے جائیں یہ غلط ہے۔ جس قوم میں ترقی کی بنیاد بجائے تعلیمی قابلیت کے نیشنالٹی یا واسطہ یا کوئی اور چیز دیکھی جائے وہ قوم کبھی [...]

2 of 212